بنیادی صفحہ / کالم / منہاس گروپ آف راکٹ سائنس کو کھلا چیلنج

منہاس گروپ آف راکٹ سائنس کو کھلا چیلنج

اور اس وزارت سے وہ سڑکیں بنا رہے ہیں ۔۔۔ ہاہاہا کمال آدمی ہو مشتاق منہاس

اسلام علیکم امیدوار وزیر اعظم آزادکشمیر اس کے بعد امیدوار سنئیر وزیر اور اس کے بعد امیدوار وزیر شاہرات و تعمرات عامہ اور جب کچھ نہیں ملا تو :

وزیر آئی ٹی ، معلومات ، نشریات، ساحت ( لیکن دفتر میں آئے ہوئے کارکنان اور مہمان کو چائے تک کا نہ پوچھنے والے )

جناب مشتاق منہاس صاحب امید ہے ٹھیک ٹھاک ہوں گے ( ویسے لگتا تو نہیں ہے )

مشتاق صاحب آپ کیوںکہ 22 جولائی 2016 سے اپنا موبائل نمبر بند کئے ہوئے ہیں سو ہم وہ بابت نہیں پوچھ سکے کہ کیوں آپ اور آپ کے حورای (مثلاٗ زولفقار کیبل والا ،ہارون بدتمیز وغیرہ وغیرہ ) ایک عبداللہ دیوانہ کے پیچھے پڑ گئے ہیں ۔

مشتاق صاحب کیوں کہ آپ کسی دور میں میری جان جمعیت کا حصہ تھے سو سوچتا تھا کہ آپ سیانے ہو گئے ہوں گے۔ مگر نہ آپ کے ساتھ وہی بیماری ہے ۔ جو قمرالزماں کو لاحق ہو گئ تھی ۔ اور پھر لوگوں نے باغ کے کنگ خان کو 3 نمبر پر بھی دیکھا۔ مشتاق منہاس صاحب کیا آپ جانتے ہیں کہ جب آپ رائونڈ سراے محل ، میڈیا ٹاؤن ، بحریہ ٹاؤن میں ”عوام” کی ”خدمت” کر رہے تھے تب یہ عبداللہ دیوانہ تھب کے غیور لوگوں کے ساتھ ملکر قمرالزماں کے آمریت زدہ دور میں پولیس کی شیلنگ لاٹھی چارج برداشت کر رہا تھا لیکن نہیں تب بھی آپ نے ہی تھب روڈ کے لئے پیسے رکھوائے تھے ؟؟؟  کمال آدمی ہیں آپ ۔

جو عبداللہ دیوانہ اپ کی الیکشن مہم کا انچارج تھا آج آپ اور آپ کے حواری انہیں بد تمیزی کے ساتھ مخاطب بھی کر رہے ہیں اور ” عبداللہ دیوانہ” کا لقب بھی دے رہیے ہیں ہم وہ وقت آپ کو یاد نہیں دلانا چاہتے جب اسی تھب روڈ پر موجود ایک گاؤں نکی کیر میں ”موشی ماسی” کی انٹری بند کے بینر لگ گے تھے ؟؟ یاد ہے نا ؟

نہیں ہو گا یاد منہاس صاحب آپ کو کیسے یاد کرنے دیں گے یہ لوگ ؟ جو آپ کے ارد گرد جونک کی طرح چمٹے ہیں ۔

پولنگ اسٹیشن تو قمر الزماں بھی بہت جیت جاتا تھا مگر ان کے صرف ایک دور کی اکڑ نے انہیں کہیں کا نہیں چھوڑا۔

او ہاں گپ شپ میں ایک بات اور بھی کیا ہم نہیں جانتے کہ عبدالشید ترابی صاحب کے ایم ایل اے بننے میں اصل رکاوٹ آپ بنے رہے۔ کیا آج بھی آپ کی انہی ‘‘کاروایئوں ” کے نتیجے میں راجہ فاروق حیدر نے باغ کا نگران وزیر سردار میر اکبر کو بنا رکھا ہے ۔ کیا عبداللہ دیوانے نے آپ کو کال پر اور ملکر اس پر تحریک کے لئے نہیں بولا تھا ؟ آپ کا جواب کیا تھا وہ بھی بتا دیں۔ ” نہیں اتنے پیسے مشکل بلکہ ناممکن ہوں گے رکھوانہ” اور یہ میر اکبر کا دل گردہ ہی تھا کہ انہوں نے اس پر کابینہ کے اجلاس میں زور دیا۔ ویسے مجھے ایک بات سمجھ نہیں آئی ۔ میر اکبر صاحب کو کریڈٹ دینے پر آپ کیوں اتنا جل بھن گئے ؟؟

کچھ تو ہے جس کی پردہ داری ہے ۔

جناب مشتاق منہاس صاحب ایک بات اور بھی کر لیتے ہیں آپ کو آئینہ پورا دیکھا دیتے ہیں ۔ ضرور برا منانا مجھے خوشی ہو گی ۔

مشتاق منہاس صاحب آپ کا پی آر او کون ہے ؟ جواب : منہاس

آپ کا پی ایس کون ہے ؟؟ جواب : مہناس

مشتاق صاحب آپ سے ملنے کے لیے وقت کس سے لینا ہے ؟؟ خالو جان ( وہ تو کنفرم منہاس )

باغ کا ایس ڈی ایم کون ہے ؟؟   جواب : منہاس

مشتاق منہاس صاحب یاسر عارف سے خضر منہاس تک آپ کی ایک بھی صوابدیدی نوکری پر لگنے والے بندے کا کوئی میرٹ نہیں ہے ۔ بات کروڑوں دکان پکوڑوں کی

منہاس گروپ آف راکٹ سائنس

اور آخری بات اور کھلا چیلنج وہ بھی عبداللہ دیوانے کا :

” استعفی دو واپس گھر آؤ اور الیکشن لڑ کہ جیت کہ دکھاؤ” اگر بنی منہاساں کے 2800 ووٹ کے علاوہ ایک بھی ووٹ مل گیا تو کہنا۔

ہم عزت کرتے بھی ہیں اور عزت کرنا اور کروانا  جانتے بھی ہیں ۔ امیر جماعت اسلامی ضلع باغ جناب نثار احمد شائق صاحب کے بارے میں آپ اور آپ کی ان پڑھ ٹیم بیانات سے باز نہ آئی تو ہم اینٹ کا جواب پھتر سے دیں گے ۔

اور ہم سب جانتے ہیں کہ امیر ضلع کی فیس بک کی پوسٹ اور ایڈمن کی باتیں آپ کو آج کل چین سے سونے نہیں دے رہی۔

خیر ابھی سو جایئں بہت رات ہو گئی ہے ۔

والسلام

فقط ایک جماعتی کا کھلا خط

ان سب کے جواب میں

باغ کے نمائندے جن کا موبائل نمبر بند مل رہا ہے

عقل اور شکل سے عاری

زولفی بوٹ پالشیا

 

ادارے کا اس تحریر سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔

اگر آپ کوئی تحریر بھیجنا چاہتے ہیں تو ہمیں لکھ بھجیں

TheCapitalViews@gmail.com

 

Like , Share , Tweet & Follow
اسلام علیکم امیدوار وزیر اعظم آزادکشمیر اس کے بعد امیدوار سنئیر وزیر اور اس کے بعد امیدوار وزیر شاہرات و تعمرات عامہ اور جب کچھ نہیں ملا تو : وزیر آئی ٹی ، معلومات ، نشریات، ساحت ( لیکن دفتر میں آئے ہوئے کارکنان اور مہمان کو چائے تک کا نہ پوچھنے والے ) جناب مشتاق منہاس صاحب امید ہے ٹھیک ٹھاک ہوں گے ( ویسے لگتا تو نہیں ہے ) مشتاق صاحب آپ کیوںکہ 22 جولائی 2016 سے اپنا…

تبصروں کا جائزہ

زائرین کی طرف سے کارکردگی کا تعین: 4.75 ( 2 ووٹ)

تعارف: admin

x

Check Also

جماعت اسلامی کا 44واں سالانہ اجلاس اور ویژن 2030 – راجہ ذاکر خان

  جماعت اسلامی آزاد جموں کشمیرگلگت بلتستان کا قیام 13جولائی 1974 ء ...